PARC
اہم کامیابیاں

غریب کسانوں کے لیےانگور کی جلد پکنے والی بیش قیمت فصل

Grapes (cv. King’s Ruby) at NARC

Grapes (cv. Perlette) at NARC
Grapes vineyard

چیلنج :

  • انگور موسم گرما کی ایک انتہائی نقد آور فصل ہے جو پہاڑی اور نیم پہاڑی علاقوں میں گرم اور معتدل آب و ہوا میں کاشت کی جاتی ہے
  • 1980تک تقریباً۔۔۔۔ایکڑ اراضی پر انگور کی کاشت سے تقریباً۔۔۔۔۔۔ٹن پیداوار حاصل کی جاتی تھی
  • موسم گرما میں مون سون کی بارشوں سے پھپھوندی اور دیگر امراض کا شکار ہونے کے سبب انگور کا دانہ خراب ہو جاتاہے ۔ہد ف ہی تھا کہ ایسی اقسام منتخب کی جائیں جو موسم برسات کی آمد سے قبل تیار ہو جائیں تاکہ نقصان سے بچا جاسکے۔
  • پوٹھوہار کے غریب کاشتکاروں میں انگور جیسی فصل متعارف کرانا

اقدامات :

  • 1988ء میں ایک اطالوی پراجیکٹ کے تحت انگور کی پانچ غیر ملکی اقسام حاصل کر کے این اےآرسی میں جانچکاری کے لیے کاشت کی گئیں
  • 1992ء تا 1995میں پی اےآرسی نے جلد پکنے والی تین اقسام کو تجارتی پیمانے پر تیاری کے لیے چناو کیا
  • 1995ء سے پی اےآرسی کے پوٹھوہار کے علاقے کے لیے ان جلد پکنے والی اقسام کی تجارتی پیمانےپر پیداوارکی ذمہ داری

نتائج :

  • پی اے آر سی نے تین جلد تیار ہونے والی اقسام بنام ، فلپم سیڈیس ، کنگ رولی اور ہار یسٹ جاری کی گئیں ۔ان اقسام کی فصلوں کو جون کے اواخر تک تیار کر کے برداشت کر لی جاتی ہیں ۔اس طرح مون سون کی بارشوں کے نقصان سے محفوظ رہ سکیں ۔اس سے کاشتکاروں کو بہتر آمدنی میں مدد ہو گی
  • پی اےآر سی نے پیداوار کے حوالے سے ایک مکمل اور جامع پیداواری ٹیکنالوجی تیار کی ہے جس میں پودوں کی دستیابی اور کاشت کے طریقے (پودے سے پودا ڈھائی میٹر فاصلہ اور گملوں کےدرمیان سوا تین میٹر فاصلہ )کین سسٹم ، انجمادی حالت میں باڑ بننا ، بیجوں کی افزائش کے وقت گچھوں کو کم کر کے فی پودا 25گچھے رکھنا ،ہفتہ وار آب پاشی ، وسط فروری میں کھاد کا استعمال اور فصل مکمل پک جانی اور برداشت کرنا جیسے امور شامل ہیں
  • کونسل کے ان اقدامات اور سرگرمیوں کے نتیجے میں یہ نئی تیار شدہ اقسام /وارئٹی بہاولپور ، بھکر ، لیہ اور پوٹھوہار کے علاقوں میں وسیع پیمانے پر کاشت کی جارہی ہے اور ان کی پیداوار بالترتیب پندرہ ہزار اور پینسٹھ ہزار ٹن فی ہیکٹر تک اضافہ ہو گیا ہے

مستقبل :

  • اعلیٰ درجہ کےکاشتی ذرائع اور مستند بیجوں کا سرکاری و نجی شعبہ کے اشتراک سے حصول