PARC
تعارف

تعارف

پاکستان زرعی تحقیقاتی کو نسل

پاکستان زرعی تحقیقا تی کو نسل ملک میں زراعت کے شعبے میں اعلی تحقیقی ادارہ ہےجس کا قیام ایک صدارتی آ رڈنینس کے ذریعہ 1981ء میں عمل میں لا یا گیا۔ یہ کونسل دیگر ملکی اور بین الاقوامی زرعی تحقیقی اداروں اور تنظیموں کے ساتھ مل کر ملک میں زرعی شعبے کو درپیش مسائل کے حل اور شعبے کی ترقی اور توسیع کے حوالے سے موجودوسائل وامکانات کےبھرپوراستعمال کے لیے سائنسی بنیادوں پر مصروف عمل ہے۔

کونسل کے اغراض ومقاصد:

(a)زرعی تحقیق ، اس کا فروغ ، ارتباط ،معاونت اور انتظام کرنا؛
(b)تحقیقی نتائج سے جلد از جلد استفادہ کے لئے انتظامات کرنا؛
(c)خاص طور پرزرعی تحقیق کے موجودہ پروگرام میں موجود تفاوت کو دورکرنے کے لئے تحقیقی اداروں کا قیام؛
(d)زرعی علوم کے شعبوں میں اعلیٰ درجہ کی سائنسی افرادی قوت کی تربیت کا انتظام؛
(e)زرعی معلومات کی تخلیق،حصول اور نشرواشاعت؛
(f)ایک تحقیقی و حوالہ جاتی کتب خانہ (ریسرچ ایند ریفرنس لائبریری) کا قیام و اہتمام؛
(g)مذکورہ بالا امور سے متعلق کسی بھی دیگر قسم کے افعال کی انجام دہی

انتظامی ڈھانچہ

پاکستان زرعی تحقیقا تی کو نسل اپنے اغراض ومقاصد اور فرائض و ذمہ داریوں سے عہدہ براہونے کے لیےایک مکمل انتظامی ڈھانچہ کی حامل ہے۔

بورڈ آف گو رنر :

وفاقی وزیر برائے قومی تحفظ خوراک و تحقیق ، کے زیر صدارت دیگر سرکاری اور غیر سرکاری اراکین پر مشتمل بورڈآف گورنرز کونسل کا اعلی ترین انتظامی فورم ہے۔ جو کونسل کے مجموعی معاملات کی نگرانی کرتا ہے اور کونسل کے فرائض ذمہ داریوں کے حوالے سے ضروری فیصلے اور ہدایات فراہم کرتا ہے۔

ایگز یکٹوکمیٹی :

کو نسل کے چیئر مین اور کل وقتی اراکین پر مشتمل یہ انتظا می کمیٹی، بورڈآ ف گورنر کے فیصلوں ہدایات اور پالیسیز پر عملدرآمد کے لیے ضروری اقدامات اور طریقہ کار وضع کرنے کی ذمہ دار ہے ۔

چیئرمین:

چیئرمین کونسل کا چیف ایگزیکٹو ہے جو کونسل کے تمام کل وقتی ٹیکنیکل اراکین ،ممبر فنانس اور دیگر اعلی انتظامی افسران کی مدد سے کونسل کے تمام امور کی انجام دہی کے لیے ذمہ دار ہے۔ چیئرمین کا تقرر صدر پاکستان کی منظوری سے تین سال کے لیے کیا جاتا ہے۔