PARC
زرعی خبریں

ماہانہ: July 2017

کیلے کا پودا ڈیڑھ سال میں پھل دینا شروع کردیتا ہے : ماہرین


پودے لگانے سے قبل زمین کو چار سے چھ مرتبہ ہل چلا کرتیار کرلیں
سندھ میں کیلے کے زیر کاشت رقبہ میں زبردست اضافہ ہو گیاہے جبکہ پنجاب کے 1389 ہیکٹرز رقبہ کے برعکس سندھ میں کیلے کی کاشت کارقبہ 32236 ہیکٹرز تک پہنچ گیا ہے نیز باغبان کیلے…. Read More >>

مرچوں کی چنائی صبح یا شام کے اوقات میں کرنی چاہیے :ماہرین


مرچوں کو اکٹھا ڈھیر کی صورت میں رکھنے کی بجائے چٹائی پر بکھیر دیناچاہیے
محکمہ زراعت فیصل آبادکے ترجمان نے کاشتکاروں کو مرچوں کی چنائی بروقت مکمل کرنے کی ہدایت کی ہے اور کہاہے مقررہ وقت پر چنائی نہ کرنے سے فصل کو نقصان پہنچنے کا خدشہ ہوتاہے ۔چنائی…. Read More >>

باجرے کی کاشت ڈرل کے ذریعے کریں :ماہرین


ماہرین زراعت نے باجرے کی بہتر پیداوار کے حصول کیلئے آبپاشی کا خصوصی خیال رکھنے کی ہدایت کی ہے اور کہا ہے
کہ نہری علاقوں میں پہلا پانی کاشت کے تین ہفتے بعد لگانا ضروری ہے ۔کاشتکار عام طور پر باجرے کو چھٹے کے ذریعے ہی کاشت کرتے ہیں…. Read More >>

سفید مکھی کپاس کی فصل پر پتہ مروڑ وائرس کے حملے کا سبب


محکمہ زراعت کے ترجمان نے کہاکہ سفید مکھی کی افزائش اورکپاس کی فصل پرمنتقلی پتہ مروڑ وائرس کے حملے کا سبب بنتی ہے
لہٰذا کاشتکار بارشوں کے بعد کپاس کی فصل میں جڑی بوٹیوں کی تلفی کیلئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کریں نیز کپاس کی فصل کو سفید مکھی کے…. Read More >>

مون سون میں ترشاوہ باغات پر بورڈ مکسچر کا سپرے کریں, محکمہ زراعت


کینکر اور سکیب جیسی بیماریاں پھیل سکتی ہیں ،گدھیڑی کے انڈوں کوتلف کر دیں
محکمہ زراعت پنجاب کے ترجمان کے مطابق بارشوں کی وجہ سے فضائی نمی ترشاوہ باغات میں بعض بیماریوں کا باعث بن سکتی ہے ۔ ان بیماریوں میں ترشاوہ پھلوں کا کوڑھ یعنی سٹرس کینکر اور سٹرس…. Read More >>

روئی کے بھاؤ 6350روپے من ریکارڈ، اسپاٹ ریٹس میں تیزی


مقامی کاٹن مارکیٹ میں روئی کے بھاؤ6ہزار 300 روپے سے 6 ہزار 350 روپے فی من رہے ۔
ڈومیسٹک ٹرانزیکشن کے تحت روئی کی فصل برائے 2017-18ء کی 2 ہزار 800گانٹھوں کے سودے 6 ہزار 300 روپے سے 6 ہزار 350 روپے فی من پر بند ہوئے ، شہدادپور کی…. Read More >>

غذائی شعبے کی کارکردگی میں نمایاں بہتری, 9 ماہ میں شرح نمو 9.6 فیصد


شعبے کی کارکردگی کی بہتری میں چینی کی پیداوار کا کردار اہم رہا، پام آئل کے نرخوں میں اتار چڑھاؤ کے باعث گھی کی پیداوار میں کمی
مالی سال 2016-17 کے پہلے 9ماہ کے دوران غذائی شعبے کی کارکردگی میں نمایاں بہتری دیکھی گئی جس میں چینی کی پیداوار میں…. Read More >>